In loving memory of ATHAR RAZVI
DECEMBER 14, 2014
Athar Razvi was an author of 18 books, the founder of the Galib Academy and served the Urdu language all his life.
کینیڈا میں رہائیش پذیر عالمی شہرت کے مالک اطہر رضوی صاحب کا 8 دسمبر 2014 کو مسی ساگا کے ایک اسپتال میں حرکتِ قلب بند ہونے کی وجہ سے انتقال ہو گیا۔ وہ مصنف اور محقق تھے۔ ان کی قریبا اٹھارہ کتابیں شایع ہو چکی ہیں۔ جن میں ۔۔۔ ہر ملک ملکِ ماست، اندازِ بیاں اور، بیادِ غالب، خدا کے منتخب بندے، چہرے باتیں یادیں لوگ، گر ہم برا نہ مانیں، زبان بستہ و چشم کشادہ، ڈوبتے سورج کے سائے، یاد کے موتی، دل نشیں یادیں مہرباں لوگ، بلکینیا سے بازنیا تک، عالمی میر انیس سیمینار، عالمی غالب سیمینار، کون عبث بدنام ہوا شامل ہیں۔ اس کے علاوہ وہ غالب اکیڈیمی کے زیر اہتمام کینیڈا میں ہر سال بیادِ غالب یاد گار مشاعرے کا اہتمام بھی کرتے تھے۔۔۔۔۔۔
 

Athar Razvi

A special meeting was organized by Ghalib Academy with great support from Family of the Hearts on 14th of December 2014 at Burnhamthorpe Library, Mississauga, Ontario, Canada. Nasreen Syed conducted the programme, recited her two poems for Athar Saheb, read a special message fromSatyapal Anand. The respected friends who spoke and wrote about Athar Saheb are : Adeel Siddiqi , Darakhshan Siddiqi , Salman Athar , Asma Warsi ,Manif Syed , Nasir Pervaiz Parwazi Saheb, Dr. khalid Sohail, Surraya Khan, Col. Anwar Saheb and Athar Saheb's daughter Neelofer Razvi and son Anwar Razvi....Thanks to all who took the time to participate and pay tribute to late Athar Saheb, A special thank to Pervaiz D. Salahuddin for all his help.
Nasreen Syed

 

 

 
FAMILY OF THE HEART - CANADIAN MEMBERS
http://familyofheart.com/members-CANADA/